لیکن دسمبر کوبھی ٹھرنے کی محلت نہیں ملی - MeraForum Community.No 1 Pakistani Forum Community

MeraForum Community.No 1 Pakistani Forum Community


Please Read :: New Members Require 15 Reply Post to make their Own Threads Thanks (AYAZ) ::

MeraForum Community.No 1 Pakistani Forum Community » Poetry » Urdu Poetry Categories » Ghamgheen/Sad shayari » لیکن دسمبر کوبھی ٹھرنے کی محلت نہیں ملی
Ghamgheen/Sad shayari !! Share Only Ghamgheen /Sad shayari Here!!

Advertisement
 
User Tag List

Post New Thread  Reply
 
Thread Tools Display Modes
(#1)
Old
anabia's Avatar
anabia anabia is offline
anabia is "If I know what love is, it is because of you."
Points: 8,473, Level: 62 Points: 8,473, Level: 62 Points: 8,473, Level: 62
Level up: 8% Level up: 8% Level up: 8%
Activity: 0% Activity: 0% Activity: 0%
 


Posts: 1,934
My Photos: (0)
Country:
Star Sign:
My Mood:
Thanks: 79
Thanked 424 Times in 303 Posts
Mentioned: 2 Post(s)
Tagged: 1448 Thread(s)
Quoted: 115 Post(s)
Join Date: Jul 2011
Location: Karachi
Gender: Female
ph لیکن دسمبر کوبھی ٹھرنے کی محلت نہیں ملی - >>   Show Printable Version  Show Printable Version   Email this Page  Email this Page   01-03-2012, 10:20 PM


اب کے برس اُس سے ملنے کی محلت نہیں ملی
اور اُسے بھی ہمیں یاد کرنے کی فرصت نہیں ملی
آنکھوں میں نمی تھی نا اشکوں میں تھی روانی
برسات میں کچھ دیر بھیگنے کی چاہت نہیں ملی
سارا شہر ہی مدہوش ہو رہا تھا پی کا جہاں میں
... اور ہمیں میغانے میں جانے کی اجازت نہیں ملی
اُس کی گلی میں جاتے شب بھر قیام کرتے عابد
لیکن دسمبر کوبھی ٹھرنے کی محلت نہیں ملی

 

Sponsored Links






نیلگوں فضاؤں میں
شور ہے بپا دل میں
شدتوں کے موسم کی
چاہتیں سوا دل میں
حبس ہے بھرا دل میں
میں اداس گلیوں کی
اک اداس باسی ہوں
بادلوں کے پردے سے
واہموں کو ڈھکتی ہوں
خوشبوئیں گلابوں کے جسم سے نکلتی ہیں
روشنی کی امیدیں کونپلوں پہ چلتی ہیں
پھر بہار آنے سے پہلے ٹوٹ جاتی ہیں
چوڑیاں بھی ہاتھوں میں ٹوٹ پھوٹ جاتی ہیں
جسم کے شگوفوں میں رنگ چھوڑ جاتی ہیں
بس سنہرے لہجےکی
روشنی ہے لو جیسی
ہونٹ سے پرے دل میں
کام کی دعا ایسی
کس کو یہ خبر لیکن
اِس سنہرے لہجے میں
کھارے کھارے پانی سا
بدگمانیوں سے پُر
Reply With Quote Share on facebook
The Following User Says Thank You to anabia For This Useful Post:
SHAYAN (01-03-2012)
Sponsored Links
(#2)
Old
SHAYAN SHAYAN is offline
SHAYAN is L0ve 2 B Alone..
Points: 276,576, Level: 100 Points: 276,576, Level: 100 Points: 276,576, Level: 100
Level up: 0% Level up: 0% Level up: 0%
Activity: 99% Activity: 99% Activity: 99%
 


Posts: 84,289
My Photos: (3)
Country:
Star Sign:
My Mood:
Thanks: 2,669
Thanked 6,176 Times in 4,394 Posts
Mentioned: 23 Post(s)
Tagged: 4879 Thread(s)
Quoted: 2851 Post(s)
Join Date: Aug 2008
Gender: Male
Awards Showcase
contributor award star member Award 
Total Awards: 15

Default Re: لیکن دسمبر کوبھی ٹھرنے کی محلت نہیں ملی - >>   Show Printable Version  Show Printable Version   Email this Page  Email this Page   01-03-2012, 10:25 PM

Wah ....

 

(#3)
Old
anabia's Avatar
anabia anabia is offline
anabia is "If I know what love is, it is because of you."
Points: 8,473, Level: 62 Points: 8,473, Level: 62 Points: 8,473, Level: 62
Level up: 8% Level up: 8% Level up: 8%
Activity: 0% Activity: 0% Activity: 0%
Threadstarter Threadstarter
 


Posts: 1,934
My Photos: (0)
Country:
Star Sign:
My Mood:
Thanks: 79
Thanked 424 Times in 303 Posts
Mentioned: 2 Post(s)
Tagged: 1448 Thread(s)
Quoted: 115 Post(s)
Join Date: Jul 2011
Location: Karachi
Gender: Female
Default Re: لیکن دسمبر کوبھی ٹھرنے کی محلت نہیں ملی - >>   Show Printable Version  Show Printable Version   Email this Page  Email this Page   01-04-2012, 09:52 PM

Thanks Shayan

 






نیلگوں فضاؤں میں
شور ہے بپا دل میں
شدتوں کے موسم کی
چاہتیں سوا دل میں
حبس ہے بھرا دل میں
میں اداس گلیوں کی
اک اداس باسی ہوں
بادلوں کے پردے سے
واہموں کو ڈھکتی ہوں
خوشبوئیں گلابوں کے جسم سے نکلتی ہیں
روشنی کی امیدیں کونپلوں پہ چلتی ہیں
پھر بہار آنے سے پہلے ٹوٹ جاتی ہیں
چوڑیاں بھی ہاتھوں میں ٹوٹ پھوٹ جاتی ہیں
جسم کے شگوفوں میں رنگ چھوڑ جاتی ہیں
بس سنہرے لہجےکی
روشنی ہے لو جیسی
ہونٹ سے پرے دل میں
کام کی دعا ایسی
کس کو یہ خبر لیکن
اِس سنہرے لہجے میں
کھارے کھارے پانی سا
بدگمانیوں سے پُر
(#4)
Old
Devilish Devilish is offline
Devilish has no status.
Points: 528, Level: 10 Points: 528, Level: 10 Points: 528, Level: 10
Level up: 56% Level up: 56% Level up: 56%
Activity: 14% Activity: 14% Activity: 14%
 


Posts: 233
My Photos: (0)
Country:
Thanks: 31
Thanked 7 Times in 7 Posts
Mentioned: 0 Post(s)
Tagged: 2 Thread(s)
Quoted: 20 Post(s)
Join Date: Dec 2011
Gender: Male
Default Re: لیکن دسمبر کوبھی ٹھرنے کی محلت نہیں ملی - >>   Show Printable Version  Show Printable Version   Email this Page  Email this Page   01-07-2012, 02:34 PM

keep on your sharing dear fantastic like this awesome post..

 

(#5)
Old
anabia's Avatar
anabia anabia is offline
anabia is "If I know what love is, it is because of you."
Points: 8,473, Level: 62 Points: 8,473, Level: 62 Points: 8,473, Level: 62
Level up: 8% Level up: 8% Level up: 8%
Activity: 0% Activity: 0% Activity: 0%
Threadstarter Threadstarter
 


Posts: 1,934
My Photos: (0)
Country:
Star Sign:
My Mood:
Thanks: 79
Thanked 424 Times in 303 Posts
Mentioned: 2 Post(s)
Tagged: 1448 Thread(s)
Quoted: 115 Post(s)
Join Date: Jul 2011
Location: Karachi
Gender: Female
Default Re: لیکن دسمبر کوبھی ٹھرنے کی محلت نہیں ملی - >>   Show Printable Version  Show Printable Version   Email this Page  Email this Page   01-13-2012, 10:56 PM

thnx Devilish

 






نیلگوں فضاؤں میں
شور ہے بپا دل میں
شدتوں کے موسم کی
چاہتیں سوا دل میں
حبس ہے بھرا دل میں
میں اداس گلیوں کی
اک اداس باسی ہوں
بادلوں کے پردے سے
واہموں کو ڈھکتی ہوں
خوشبوئیں گلابوں کے جسم سے نکلتی ہیں
روشنی کی امیدیں کونپلوں پہ چلتی ہیں
پھر بہار آنے سے پہلے ٹوٹ جاتی ہیں
چوڑیاں بھی ہاتھوں میں ٹوٹ پھوٹ جاتی ہیں
جسم کے شگوفوں میں رنگ چھوڑ جاتی ہیں
بس سنہرے لہجےکی
روشنی ہے لو جیسی
ہونٹ سے پرے دل میں
کام کی دعا ایسی
کس کو یہ خبر لیکن
اِس سنہرے لہجے میں
کھارے کھارے پانی سا
بدگمانیوں سے پُر
Post New Thread  Reply

Bookmarks

Tags
لیکن, محلت, ملی, نہیں, کی

Thread Tools
Display Modes

Posting Rules
You may not post new threads
You may not post replies
You may not post attachments
You may not edit your posts

BB code is On
Smilies are On
[IMG] code is On
HTML code is Off

Similar Threads
Thread Thread Starter Forum Replies Last Post
تم سب مل کر ایک مکھی بھی پیدا نہیں کرسکتے۔ ROSE Quran 3 07-06-2012 10:50 PM
بجھ چکے ہیں مرے سینے میں محبت کے کنول life Urdu Writing Poetry 5 07-13-2011 10:37 PM
دیکھ، بھولے نہیں تیری ہستی سے محبت کرنا Shaam Miscellaneous/Mix Poetry 2 07-02-2011 06:50 AM
دیکھو پھر تم ہمیں رلانے بیٹھ گئے ھو RAJA_PAKIBOY Image Poetry 11 07-30-2010 11:42 AM
مجھے یومِ محبّت پر تمھیں کچھ بھی نہیں دینا RAJA_PAKIBOY Image Poetry 10 07-27-2010 06:22 PM


All times are GMT +5. The time now is 07:40 AM.
Powered by vBulletin®
Copyright ©2000 - 2018, Jelsoft Enterprises Ltd.

All the logos and copyrights are the property of their respective owners. All stuff found on this site is posted by members / users and displayed here as they are believed to be in the "public domain". If you are the rightful owner of any content posted here, and object to them being displayed, please contact us and it will be removed promptly.

Nav Item BG